وسوسه = فقہ حنفی کا هرمسئلہ سند کے ساتھ امام ابوحنیفہ سے ثابت نہیں هے

وسوسه = فقہ حنفی کا هرمسئلہ سند کے ساتھ امام ابوحنیفہ سے ثابت
نہیں هے
جواب = صرف اور صرف امام ابوحنیفہ کے ساتھ بغض کی وجہ سے یہ
وسوسہ بهی عوام میں پهیلایا جاتا هے ، آپ کبهی بهی نام نہاد فرقہ اهل حدیث میں شامل
جہلاء کی زبانی فقہ شافعی ، فقہ مالکی ، فقہ حنبلی ، کے خلاف کوئی بات نہیں سنیں گے
کیونکہ ان کا مقصد ومشن امام ابوحنیفہ اور فقہ حنفی کی مخالفت هے ، کیونکہ یہ فرقہ
شاذه اسی کام کے لیئے هندوستان میں پیدا کیا گیا ، باقی مذکوره بالا وسوسہ کا جواب
یہ هے کہ الحمد لله فقہ حنفی کا هرمفتی بہ اورمعمول بها مسئلہ سند ودلیل کے ساتھ ثابت
هے ، اور سند سے بهی زیاده مضبوط وقوی دلیل تواتر هے ، اوراهل سنت کے نزدیک یہ بات
متواتر هے کہ فقہ حنفی کے مسائل واجتهادات امام ابوحنیفہ اورآپ کے تلامذه کے هیں ،
اورعلماء امت نے مذاهب اربعہ کے مسائل پرمشتمل مستقل کتب لکهی هیں ، مثال کے طور پر
کتاب (( بداية المجتهد ونهاية المقتصد )) علامہ القاضي أبي الوليد ابن رشد القرطبي
المالکی کی هے ، اس میں مذاهب اربعہ کے تمام مسائل دلائل کے ساتھ موجود هیں ، اوراس
باب میں یہ کتاب انتہائی بہترین اورمقبول کتاب هے ، اسی طرح ایک کتاب (( الفقه على
المذاهب الأربعة )) علامہ عبد الرحمن الجزيري کی هے ، اسی طرح ایک کتاب (( رحمة الأمة
في اختلاف الأئمة )) علامہ محمد بن عبدالرحمن بن الحسين القرشي الشافعي الدمشقی کی
هے ، اسی طرح امام شعرانی کی کتاب (( المیزان )) وغیرذالک بہت سارے کتب ورسائل هیں
جس میں مذاهب اربعہ کے مسائل موجود هیں ، توامام اعظم ابوحنیفہ کے مسائل وفقہ بهی ثابت
هے اسی لیئے توعلماء اهل سنت امام اعظم ابوحنیفہ کے اقوال ومسائل بهی نقل کرتے هیں
، تمام علماء متاخرین ومتقدمین ( اگلے پچهلے ) سلف وخلف سب دیگرائمہ کے ساتھ امام اعظم
ابوحنیفہ کا مذهب اور اقوال ومسائل بهی نقل کرتے هیں ، توامام اعظم ابوحنیفہ کے بارے
میں یہ وسوسہ کہ فقہ حنفی کا هرمسئلہ سند کے ساتھ امام ابوحنیفہ سے ثابت نہیں هے بالکل
باطل وفاسد هے ، اور هم اس وسوسہ کے پهیلانے والے نام نہاد فرقہ اهل حدیث کے جہلاء
سے سوال کرتے هیں کہ تم قرآن مجید کی هر هر آیت حضور صلی الله علیہ وسلم سے سند کے
ساتھ ثابت کرو الحمد سے والناس تک پڑهتے جاو اور ایک ایک آیت کی سند بهی پیش کرتے جاو
، فرقہ اهل حدیث کے اگلے پچهلے سب جمع هوجائیں تب بهی پیش نہیں کرسکتے ، اگر فرقہ اهل
حدیث کے یہاں تواتر کی کوئی حیثیت نہیں هے صرف سند ضروری هے توپهرسارے قرآن کا کیا
کروگے ؟؟ لهذا هم کہتے هیں کہ قرآن مجید کا ایک ایک حرف اورایک ایک آیت محفوظ هے اورثابت
بالتواتر هے ، بعینہ اسی طرح فقہ حنفی کے مسائل تواترکے ساتھ ثابت هیں ، اورالحمد لله
دلائل کے اعتبارسے فقہ حنفی اقرب الی الکتاب والسنہ هے ، اور اس بات کا اقرار صرف علماء
احناف هی نہیں بلکہ غیرعلماء احناف نے بهی کیا هے
 

By Mohsin Iqbal

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s